جسٹس (ر) محمود اختر نے عام انتخابات کی شفافیت سپریم کورٹ میںچیلنج کردی

اسلام آباد (نمائندہ نوائے وقت) سپریم کورٹ میں 2013ء کے عام انتخابات کی شفافیت کو چیلنج کردیا گیا۔ درخواست گزار ریٹائرڈ جسٹس محمود اختر نے موقف اختیار کیا ہے کہ الیکشن کمشن نے اپنی ذمہ داری پوری نہ کرکے انتخابات کی شفافیت مشکوک بنا دی ہے۔ مقناطیسی سیاہی اور دیگر سامان فراہم کرنا الیکشن کمشن کی ذمہ داری تھی۔ الزامات کی تحقیقات کی جائے اور انتخابات کو کالعدم قرار دیا جائے جبکہ غفلت کے ذمہ داروں کو سخت سے سخت سزا دی جائے۔ درخواست میں مزید کہا گیاہے کہ انتخابات کو مشکوک بنانے کا ذمہ دار الیکشن کمشن ہے ریٹرننگ افسران نہیں۔ درخواست میں وفاق اور الیکشن کمشن کو فریق بنایا گیا ہے۔ درخواست گزار کی پیروی سابق جج جسٹس اللہ نواز کریں گے۔ درخواست گزار جسٹس (ر) محمود اختر نے کہاکہ ہم توقع کر رہے تھے کہ سپریم کورٹ انتخابات میں دھاندلی کا ازخود نوٹس لے گی، نوٹس نہ لئے جانے پر انہوں نے درخواست دائر کی ہے۔
شفافیت چیلنج