’’ذوالفقار مرزا نے حکومتی رٹ کو کھلے عام چیلنج کیا‘‘

’’ذوالفقار مرزا نے حکومتی رٹ کو کھلے عام چیلنج کیا‘‘

اسلام آباد (خبرنگار خصوصی) سندھ کے سابق وزیر داخلہ ذوالفقار مرزا بدین کے تھانے میں اسی انداز میں داخل ہوئے جس طرح 20 ستمبر 1996ء کو سابق وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کے بیٹے میر مرتضیٰ بھٹو اپنے ساتھی علی سنار کو تلاش کرنے کیلئے کراچی کے مختلف تھانوں میں داخل ہوئے تھے اسوقت مرتضیٰ بھٹو کی بہن بے نظیر بھٹو وزیراعظم تھیں اور تھانوں کی تلاشی لینے کے بعد مرتضیٰ بھٹو واپس جا رہے تھے کہ پولیس والوں نے انکو ساتھیوں سمیت مار دیا تھا جبکہ گزشتہ روز سابق وزیر داخلہ ذوالفقار مرزا بھی اسی انداز میں تھانے گئے انکے ساتھ 20 سے زائد انکے ساتھی بھی تھانے میں موجود تھے۔ سندھ حکومت نے ذوالفقار مرزا کیخلاف آہنی ہاتھ سے کارروائی نہ کی تو پھر حکومتی رٹ کو دوسرے لوگ بھی چیلنج کرتے رہیں گے۔