بی آئی ایس پی نے آئندہ بجٹ میں100ارب روپے مانگ لیے

اسلام آباد (آن لائن) بینظیرانکم سپورٹ پروگرام نے آئندہ مالی سال کے وفاقی بجٹ 2015، 2016 میں پسماندہ اورغریب لوگوں کیلیے کسی بھی قسم کی کوئی نئی سکیم نہ لانے کافیصلہ کرلیا۔ تاہم پہلے سے جاری سکیموں کیلیے 100 ارب روپے مانگ لیے۔ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ بی آئی ایس پی نے وزارت خزانہ کوبی آئی ایس پی کے زیراہتمام جاری پروگراموں کوموثر اندازمیں چلانے کیلئے تجاویز ارسال کی ہیں،بجٹ کی منظوری کے بعدملک بھر میں جاری عوام کی فلاح وبہبودکے پروگرام کو آرگنائزکیاجائے گا۔ بی آئی ایس پی کے تحت وسیلہ تعلیم، (تعلیم سب کے لیے) وسیلہ صحت کے تحت ہیلتھ انشورنس، وسیلہ حق،وسیلہ روزگارکے تحت ٹیکنیکل ایجو کیشن، بینظیر سمارٹ کارڈ، بینظیر ڈیبٹ کارڈ، موبائل فون بینکنگ، منی آڈرکی سہولت فراہم کی جاتی ہیں۔
100 ارب