سوئس بنکوں سے رقوم کی واپسی کیلئے پاکستانی وفد 24 اگست کو زیورچ روانہ ہو گا

اسلام آباد(آن لائن ) فیڈرل بورڈ آف ریونیو اور وزارت خزانہ کا ایک اعلی سطح کا وفد رواں ماہ کی 24 تاریخ کوسوئٹزرلینڈ کے بڑے شہر زیورچ روانہ ہو گا جہاں وہ سوئس حکام  سے پاکستان اور سوئٹزر لینڈ کے درمیان موجود دوہرے ٹیکسوں کے معاہدے میں ترامیم کے لئے باقاعدہ بات چیت شروع کر ے گاتا کہ سوئس بینکوں میں  موجود تقریباً 200 ارب ڈالرز مالیت کی پاکستانی رقوم کے حوالے سے مذاکرات شروع کئے جا سکیں۔ فیڈرل بورڈ آف ریونیو ذرائع کے مطابق اسلام آباد سوئس حکام سے کسی نئے معاہدے کی بجائے دونوں ممالک کے مابین موجودہ معاہدے میں ہی ترامیم کا خواہش مند ہے اور اس حوالے سے پہلے ہی دونوں ممالک کے متعلقہ حکام رابطہ میں ہیں تاہم باقاعدہ بات چیت کا آغاز رواں ماہ کے آخری ہفتہ میں پاکستان کے اعلی سطح کے وفد کے دورہ سوئٹزرلینڈسے ہو گا۔ پاکستان سوئٹزرلینڈکے نئے متعارف شدہ قوانین سے فائدہ اٹھاتے ہوئے سوئس بینکوں میں موجود پاکستانی پیسہ اور ٹیکسوں کی ادائیگی کے حوالے سے معلومات اور بعد ازاں اس پیسہ کو واپس لانے کا خواہشمند ہے جبکہ پرانے سوئس قوانین کے تحت سوئس حکومت ایسی معلومات کے تبادلہ کی مجاز نہیں تھی۔
سوئس بنک/وفد روانہ