کالا باغ ڈیم تعمیر کرکے ملکی مفاد کے ساتھ نہیں کھیلنا چاہتے: احسن اقبال

اسلام آباد (این این آئی) وفاقی وزیرمنصوبہ بندی وترقیات احسن اقبال نے کہاہے کہ کسی ملک نے جنگ کے ساتھ ترقی نہیں کی، ترقی کے لیے امن ہر ملک کی ضرورت ہے اگر ہم جنگوں میں جائیں گے محاذ آرائی کریں گے توپھر خود کو ہم شمالی کوریاجیساملک سمجھیں ، حکومت بجلی بحران کے خاتمے کے لیے دن رات ایک کیے ہوئے ہیں اورانشاء اللہ اگلے تین سے چارسالوں میں اس لعنت سے چھٹکاراپالیں گے، آئندہ بجٹ کے اندرکراچی لاہورموٹروے منصوبے کے لیے 55ارب روپے رکھے گئے ہیں،کسی بھی ملک کی ترقی میں انفراسٹرکچرکو انتہائی اہمیت حاصل ہے،ہمسایہ ممالک کے ساتھ امن قائم کرکے پاکستان کو معاشی حب بنایاجاسکتاہے،کالاباغ ڈیم بنانے کے لیے تمام صوبوں کے درمیان اتفاق رائے ہونا بہت ضروری ہے ایک صوبے پر کالاباغ ڈیم تعمیر کرکے پاکستان کے مفاد کے ساتھ نہیں کھیلنا چاہتے،مستحکم ترقی کے لیے ٹیکس نیٹ کا دائرہ کارودسیع کرناہوگاتاکہ ملکی وسائل پر زیادہ سے زیاد انحصارکیاجاسکے اورقرضوں سے نجات مل پائے،نجی ٹی وی کے پروگرام میں اظہارخیال کرتے ہوئے  احسن اقبال نے  مزید کہاکہ ان کی حکومت بجلی بحران کے خاتمے کے لیے دن رات ایک کیے ہوئے ہیں  اس سال معاشی استحکام کے بعد اگلے سال کوشش کریں گے کہ پاکستان کو گروتھ کی طرف لے کرجائیں اوراس میں ہماری ترجیحات میں نمبر ایک توانائی ہے کیونکہ توانائی کے بغیر  معیشت کو نہیں چلاسکتے ،دوسری ترجیح ٹرانسپورٹ انفراسٹرکچرہے کیونکہ دنیامیں جس ملک نے بھی ترقی کی ہے اس نے اپنے انفراسٹرکچر کوبہتربنایاہے۔ آج ہمارے پاس وقت ہے کہ ہم فیصلہ کریں کیاہم نے مضبوط معاشی قوم بنناہے یاپھر انہی ماضی کے رویوں کے سائے میں زندہ رہنا ہے۔