ممتاز قادری کی اسیری، سنی تحریک کا 4جنوری کو اڈیالہ جیل تک مارچ کا اعلان

ممتاز قادری کی اسیری، سنی تحریک کا 4جنوری کو اڈیالہ جیل تک مارچ کا اعلان

راولپنڈی (آن لائن) سربراہ پاکستان سُنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری نے4جنوری کو غازی ممتاز حسین قادری کی اسیری کے تین سال مکمل ہونے پر اڈیالہ جیل تک تحفظ ناموس رسالت مارچ کا اعلان کردیا۔ پاکستان سُنی تحریک کے زیراہتمام راولپنڈی پریس کلب میں منعقدہ عشق رسول سیمینار سے ٹیلی فونک خطاب کرتے ہوئے ثروت اعجاز قادری نے کہا کہ تحفظ ناموس رسالت کےلئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔ ملک ممتاز حسین قادری نے حسینیت کو زندہ اور یزیدیت کو دفن کیا ہے۔گستاخ رسول کا قتل رائیگاں جاتا ہے۔ شریعت اس پر کوئی حد‘ قصاص یا دیت طلب نہیں کرتی۔ ممتاز حسین قادری نے توہین رسالت پر جس ردعمل کا مظاہرہ کیا ہے وہ ایمانی غیرت کا تقاضا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ وزیراعظم میاں نوازشریف غازی ممتاز حسین قادری کو اسلامی قوانین کے مطابق باعزت بری کریں۔ ریمنڈ ڈیوس جیسے قاتلوں کو ڈالروں کے بدلے میں رہا کروا دیا جاتا ہے‘ رات کی تاریکیوں میں عدلتیں لگائی جا سکتی ہیں تو ممتاز قادری کو کیوں رہا نہیں جا سکتا؟ توہین ناموسِ رسالت ایکٹ کو چھیڑا گیا تو ملک میں ارتداد کی راہ کھل جائے گی۔ امریکی ڈرون حملے پا کستان کی خودمختاری اور سلامتی پر حملہ ہے۔ عالمی برادری امریکی جا رحیت کا نوٹس لے۔ مفتی لیاقت رضوی، ملک عبدالرﺅف، راجہ شجاع الرحمن ایڈوکیٹ، صاحبزادہ محمد اخلاق جلالی، مفتی نصیرالدین نصیر رضوی نے کہا کہ عقےدہ ختم نبوت ہمارے اےمان کی اساس ہے اور اس پر حملہ کرنے والے کسی بھی رعائت کے مستحق نہےں ۔ حکومت قادےانےوں کی تبلےغی سرگرمےوں پر پابندی لگائے اور انہےں کلےدی عہدوں سے ہٹاےا جائے۔ اس موقع پرغازی ممتاز حسین قادری کے والد محترم ملک بشیر احمد اعوان اور دیگر بھی موجود تھے۔
مارچ