پی سی او کے 37 آرڈیننس‘ پارلیمنٹ کے ذریعے فیصلے کیلئے اعلیٰ سطح پر مشاورت

اسلام آباد (آن لائن) سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد پی سی او کے عرصے میں جاری ہونے والے 37 آرڈیننسز کے مستقبل کیلئے پارلیمنٹ کے ذریعے فیصلہ کرنے کیلئے حکومت نے اعلیٰ سطح پر مشاورت شروع کردی ہے۔ ذمہ دار ذرائع کے مطابق چیئرمین سینٹ نے عشائیہ پر صدر آصف علی زرداری سے ملاقات کی جس میں چیئرمین سینٹ کے اہل خانہ بھی موجود تھے۔ ملاقات میں سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد کی صورتحال اور حکومتی حکمت عملی پر تفصیلی غور وخوض کیا گیا۔ فاروق ایچ نائیک نے صدر کو سپریم کورٹ کے فیصلے کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ اس سے قبل اٹارنی جنرل نے بھی صدر سے ملاقات کرکے اس فیصلے کے چیدہ چیدہ نکات اور اس کے موجودہ جمہوری ڈھانچے پر اثرات کے بارے آگاہ میں کیا۔ یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ فاروق نائیک نے سینٹ میں قائد ایوان نیئر بخاری سے مشاورت کی کہ اگر پی سی او کے عرصے کے دوران تمام آرڈیننسز کو پارلیمنٹ میں لایا جاتا ہے تو حکومت کس طرح ان پر قانون سازی کرے گی اور حکومت کی اتحادی جماعتوں اور اپوزیشن کا اس پر کیا رد عمل ہو گا۔ اس پر بھی تفصیلی جائزہ لیا گیا۔