عدالتی فیصلہ کے بعد حکومت این آر او کے حوالے سے مشکلات کا شکار

اسلام آباد (جاوید صدیق) سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد اب حکومت این آر او کے حوالے سے آزمائش کا شکار ہو گئی ہے‘ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد اب حکومت کو 120 دن کے اندر این آر او کو پارلیمنٹ سے منظور کرانا ہوگا حکومت کو این آر او کی منظوری کے لئے سادہ اکثریت درکار ہے لیکن اگر پاکستان مسلم لیگ (ن) این آر او کو منظور کرانے کے حق میں ووٹ نہیں دیتی تو این آر او کو منظور کرانا مشکل ہوگا ‘ این آر او کی منظوری کے لئے پارلیمنٹ کے 172 ارکان کی ضرورت ہے جب کہ پیپلز پارٹی‘ اے این پی‘ ایم کیو ایم‘ جمعیت علمائے اسلام اور فاٹا کے ارکان کو ملا کر شاید یہ اکثریت حاصل نہ ہو سکے‘ جمعیت علمائے اسلام نے تو صدر زرداری کو خط لکھا ہے کہ اگر ستمبر تک ملک میں اسلامی نظریاتی کونسل کی سفارشات کے تحت اسلامی نظام نافذ نہ ہوا اور امریکہ نواز پالیسیاں تبدیل نہ کی گئیں تو جمعیت علمائے اسلام حکومت سے علیحدگی اختیار کر لے گی۔