پیپلز پارٹی مسلم لیگ ن سے اتحاد کے خواب دیکھنا چھوڑ دے: چودھری نثار

پیپلز پارٹی مسلم لیگ ن سے اتحاد کے خواب دیکھنا چھوڑ دے: چودھری نثار

اسلام آباد ( وقا ئع نگار خصوصی + نیوز ایجنسیاں) قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف چودھری نثار نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی کے ساتھ اتحاد کی نہیں نجات کی ضرورت ہے‘ الائنس کا سوچ بھی نہیں سکتے‘ حکمران جماعت کی قیادت ایسے خواب دیکھنا چھوڑ دے‘ صدر زرداری اور ان کے حواریوں کے برے طرز حکمرانی نے بدعنوانی کے تمام ریکارڈ توڑ دئیے، موجودہ حکومت نے استحصال کے سوا عوام کے لئے کچھ نہیں کیا‘ ہم پیپلزپارٹی کے ایجنڈے سے متفق ہوتے تو وفاقی کابینہ سے الگ نہ ہوتے‘ سیاسی ضرورت کے باوجود پیپلز پارٹی کو پنجاب حکومت سے الگ کیا ہے۔ پارلیمنٹ ہا¶س میں صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ پیپلز پارٹی سے اتحاد کی بجائے ان سے نجات کی کوشش کی جائے۔ عوام گڑگڑا کر موجودہ حکمرانوں کے جانے کی دعا مانگ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں یہ واضح کر دوں کہ مسلم لیگ (ن) آئندہ انتخابات میں پیپلز پارٹی سے کسی قسم کا سیاسی اتحاد نہیں کرے گی، ہم ایک ایسی سیاسی پارٹی سے کس طرح اتحاد کر سکتے ہیں جس نے پانچ سالوں میں اچھے بھلے ملک کو کھوکھلا کر دیا۔ عدالتی فیصلوں کا مذاق اڑایا گیا، سرکاری اداروں کو تباہ کر دیا، عوام کی مشکلات میں بے پناہ اضافہ کیا اور ملک کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا۔ آئندہ انتخابات موجودہ حکومت نے نہیں بلکہ نگران حکومت اور الیکشن کمشن نے کروانے ہیں جس میں زرداری کا کوئی کردار نہیں ہو گا۔ پیپلز پارٹی کی حکومت 18 مارچ کو خودبخود ختم ہو جائےگی اور یہ کسی صورت انتخابات کو نہیں روک سکتے۔