مقبوضہ کشمیر کے تعلیمی نصاب سے کشمیری تاریخ خارج، حریت کانفرنس کا احتجاج

اسلام آباد (جاوید صدیق) حریت کانفرنس نے مقبوضہ کشمیر کے تعلیمی اداروں میں کشمیر کی تاریخ کو نصاب سے خارج کرنے پر سخت احتجاج کیا ہے اور کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کے سکولوں میں بھارت کی تاریخ پڑھائی جا رہی ہے۔ حریت کانفرنس کے رہنما میرواعظ عمر فاروق نے فون پر نوائے وقت سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ بھارتی حکومت اور ریاستی حکومت دونوں کشمیریوں کی تاریخ اور ثقافت سے کشمیریوں کی نئی نسل کو دور رکھنا چاہتے ہیں لیکن ہم اس سازش کا مقابلہ کریں گے۔ میرواعظ عمر فاروق نے کہا کہ بھارتی حکومت کشمیریوں کے نام پر دریاﺅں پر ڈیم بنا رہی ہے لیکن کشمیر اندھیروں میں ڈوبا رہتا ہے۔ میرواعظ نے کہاکہ ہم نے ایک اکنامک ایڈوائزری کونسل بنانے کا فیصلہ کیا ہے جس میں کشمیری ماہرین شامل ہوں گے وہ کشمیریوں کے معاشی استحصال کو بے نقاب کریں گے۔ انہوں نے کہا مجھے بھارتی پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں محسوس ہوئی وہ کشمیر پر بات چیت آگے بڑھانے میں سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں کرے گا۔