بارسلونا قونصلیٹ نے نئے کریکٹر سرٹیفیکیٹ کے حوالے سے ہدایات جاری کر دیں

سپین (رپورٹ زاہد مصطفیٰ اعوان) بار سلونا قونصلیٹ کی طرف سے جاری کردہ ایک پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ نیا کریکٹر سرٹیفیکیٹ جو کہ پاکستان کی مجاز اتھارٹی یعنی کہ نیشنل پولیس بیورو اسلام آباد کی جانب سے تمام ضروری کارروائی کے بعد جاری کئے گئے ہوں اور جن کے اجراءکا طریقہ کار پہلے ہی وضع کیا جا چکا ہے اس کے مطابق ایسے تمام افراد جن کے کیسز نیا کریکٹر سرٹیفیکیٹ نہ ہونے کی بناءپر 30 دسمبر 2008ءکو مسترد کر دیئے گئے تھے ان کے لئے ہسپانوی حکومت کی جانب سے یہ طریقہ کار دیا گیا ہے کہ اس مقصد کے لئے پاکستانی ایسوسی ایشنز سے گزارش کی جاتی ہے کہ ایسے تمام پاکستانیوں کے نئے تصدیق شدہ کریکٹر سرٹیفیکیٹ اپنے پاس جمع کریں اور ان کے ساتھ کاغذات جمع کراتے وقت کی رسید (Resguardo) اور وہ صفحہ جس پر پیپرز کے مسترد کئے جانے کی تفصیل ہے (Disfavorable) بھی ساتھ منسلک کریں اس سروس کی کوئی فیس نہیں ہو گی۔ تمام افراد قونصلیٹ کے تعاون سے اپنے کاغذات 10 فروری بروز منگل ایسوسی ایشنز میں شام چار بجے سے 5 بجے کے درمیان گورنر سول آفس میں واقع کائے مورثیا نمبر42 میں محمد ابراہیم اعوان کے پاس جمع کرائیں۔ ہر درخواست گزار کا ذاتی طور پر حاضر ہونا ضروری نہیں۔ یہ ہدایات ان افراد پر لاگو نہیں ہوتیں جن کے کاغذات کسی اور وجہ سے یا کسی اور تاریخ میں مسترد کئے گئے ہوں۔ باقی تمام افراد جنہیں مسترد شدہ خط وصول ہو گیا ہو وہ اس خط کی تفصیل کے مطابق متعلقہ دفاتر میں مقررہ وقت کے اندر اپیل دائر کر سکتے ہیں۔ واضح رہے کہ کریکٹر سرٹیفیکیٹ کے مسئلہ کے حل کے لئے روزنامہ نوائے وقت کا کردار اہم رہا جس پر کمیونٹی کی اہم شخصیات نے مبارک باد دی ہے۔