امریکہ کی سکڑتی معیشت نے متوسط طبقے کیلئے تباہ کن صورتحال پیدا کر دی: اوباما

واشنگٹن (نمائندہ خصوصی) امریکی صدر بارک اوباما نے کہا ہے کہ کساد بازاری گہری ہونے سے معاشی بحران مزید شدت اختیار کر رہا ہے جس کے نتیجے میں متوسط خاندانوں پر تباہ کن اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔ یہ بات انہوں نے وائٹ ہاﺅس میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے محکمہ تجارت کے اعداد و شمار پیش کرتے ہوئی بتایا کہ ان سے پتہ چلتا ہے کہ 2008ءکے آخری تین ماہ کے دوران امریکی معیشت 3.8 فیصد کی شرح سے سکڑ گئی ہے۔ انہوں نے توقع ظاہر کی کہ کانگرس اقتصادی بحران سے نمٹنے کیلئے بیل آﺅٹ منصوبوں پر قانون سازی کا عمل جاری رکھے گی۔ صدر اوباما نے اپنا یہ عزم دہرایا کہ وہ اپنے پیشرو صدر بش کی لیبر پالیسیوں کو یکسر تبدیل کر دیں گے۔ اس سلسلے میں انہوں نے اداروں میں یونینز کے فروغ اور کارکنوں کے حقوق کو مستحکم بنانے کے لئے تین ایگزیکٹو آرڈرز پر دستخط بھی کئے۔ اوباما نے کہا کہ گزشتہ 8 سال سے جاری ایسی تمام لیبر پالیسیوں کو تبدیل کروں گا جن سے میں شدید اختلاف کرتا ہوں۔