شام : ادلب میں شامی حکومت کے آخری گڑھ پر بھی باغےوں نے قبضہ

دمشق (آن لائن) القاعدہ سے منسلک اسلامی شدت پسند تنظیم النصرہ فرنٹ کے جنگجوو¿ں اور دیگر باغیوں پر مشتمل اتحاد نے شام کے مغربی صوبے ادلب میں حکومت کے آخری گڑھ پر بھی قبضہ کر لیا ہے۔ دوسری جانب شامی فوج کا کہنا ہے کہ شہر میں شدید لڑائی جاری ہے۔ اریحا پر باغیوں کے قبضے کا مطلب یہ ہوگا کہ ادلب کا پورا صوبہ اب باغیوں کے کنٹرول میں ہے۔ واضح رہے کہ شام میں گذشتہ سال مارچ سے باغیوں کی پیش قدمی جاری ہے اور انھوں نے ادلب کے متعدد شہروں پر قبضہ کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ شام میں چار سال قبل شروع ہونے والی خانہ جنگی میں اب تک دو لاکھ سے زیادہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ ایک کروڑ سے زیادہ شہری پناہ کے لیے ہجرت پر مجبور ہوچکے ہیں۔ ادلب کی سرحد ترکی کے ساتھ ساتھ شامی صوبے لاذقیہ سے بھی ملتی ہیں جو صدر بشار الاسد کی حکومت کا مضبوط گڑھ تصور کیا جاتا ہے۔
ادلب/ قبضہ