بغداد : دو بڑے ہوٹلوں کے باہر بم دھماکے‘ دس افراد ہلاک ساٹھ زخمی

بغداد : دو بڑے ہوٹلوں کے باہر بم دھماکے‘ دس افراد ہلاک ساٹھ زخمی

لند ن ( بی بی سی +آئی این پی) مرکزی بغداد کے دو بڑے ہوٹلوں کے باہر دو کار بم دھماکو ں میں کم از کم دس افراد ہلاک ہوگئے ۔ دھماکہ دریائے دجلہ کے کنارے بیبیلون ہوٹل کے باہر ہوا اور دوسرا اشتار ہوٹل کے باہر ہوا جو پہلے شیرٹن ہوٹل ہوا کرتا تھا ۔ دھماکوں میں کم از کم 30 افراد زخمی بھی ہوئے ۔ دھماکوں کے بعد گولیاں چلنے کی بھی آوازیں سنائی دی گئیں ۔ بم دھماکے کے نتیجے میں متعدد کاریں اور گاڑیاں تباہ ہوگئیں اور ہوٹلوں کی بیرونی کھڑکیاں ٹوٹ گئیں۔پولیس ے بیبیلون ہوٹل کے کار پار ک میں ملنے والا تیسرا بم ناکارہ بنا دیا ۔ یہ ہوٹل خاصے مصروف ہوتے ہیں اور حالیہ برسوں میں ان کی دوبارہ مرمت کی گئی تھی ۔ 2010 ءمیں بھی ان ہوٹلوں پر کار بم حملے کیے گئے تھے جن میں 30 سے زیادہ افراد ہلاک ہوئے تھے ۔ داعش نے بغداد اور ملک کے دوسرے علاقوں میں متعدد بم دھماکوں کی ذمے داری قبول کر لی۔