عراق 11 کار بم دھماکوں سے لرز اٹھا‘ سکیورٹی اہلکاروں سمیت 31 جاں بحق

عراق 11 کار بم دھماکوں سے لرز اٹھا‘ سکیورٹی اہلکاروں سمیت 31 جاں بحق

بغداد( اے ایف پی) عراق میں تشدد کا سلسلہ رک نہ سکا۔ خود کش کار بم حملے،11 کار بم دھماکوں اور فائرنگ کے واقعات میں مزید 31 افراد جاں بحق، بیسیوں زخمی اور صوبائی پولیس چیف قاتلانہ حملے میں بال بال بچ گئے۔ بتایا جاتا ہے کہ تکریت شہر میں کار بم دھماکے میں صوبائی پولیس چیف میجر جنرل جمعہ الادوسیمی بچ گئے، 3 شہری مارے گئے۔ سامرہ میں پولیس چیک پوسٹ پرخود کش حملے میں فرسٹ لیفٹیننٹ سمیت 3 اہلکار ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے۔ بغداد میں سڑک کنارے بم دھماکے میں القاعدہ مخالف ملیشیا کے کارکن مارے گئے۔ بغداد کے نواحی علاقے میں دو بم دھماکوں میں 4 افراد جاں بحق ہوئے۔ موصل میں مسلح شخص  کی فائرنگ سے یزیدی فرقے کے 2 کارکنوں سمیت 3 مارے گئے۔ اے ایف پی کیمطابق رواں ماہ میں ہلاکتیں 600 تک پہنچ گئیں۔ صوبہ بابل کے دارالحکومت حلہ میں 6 بم دھماکے ہوئے، 6 افراد مارے گئے۔ جنازے میں پھر دھماکے سے متعدد افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔