فلسطینی رہنما یاسر عرفات کی موت کی وجوہات جاننے کیلئے ان کی قبر سے باقیات نکال لی گئیں۔

فلسطینی رہنما یاسر عرفات کی موت کی وجوہات جاننے کیلئے ان کی قبر سے باقیات نکال لی گئیں۔

یاسرعرفات گیارہ نومبر دوہزار چار میں فرانس کے ایک ہسپتال میں طویل عرصہ زیرعلاج رہنے کے بعد انتقال کرگئے تھے۔ انہیں رملہ میں دفن کیاگیاتھا جبکہ ان کی قبرکشائی کے اعلان کے ساتھ ہی ان کی قبرپرسیکورٹی انتہائی سخت کردگئی تھی۔ فلسطینی رہنما کی باقیات کے نمونے حاصل کرنے کے بعد انہیں آج ہی پورے فوجی اعزاز کے ساتھ دفن کردیاجائےگا۔ سوئس، فرانسیسی اور روسی ماہرین ان کی باقیات سے یہ پتہ لگانے کی کوشش کریں گے کہ کہیں ان کی موت زہر خورانی کی وجہ سے تو نہیں ہوئی۔ لاش کو قبر سے نکالنے کے بعد ماہرین نمونے لے کر اپنے اپنے ملک روانہ ہوجائیں گے اور ان کے جسم میں پولونیم کے ذرات کی موجودگی کا پتہ لگانے کی کوشش کریں گے۔ اس سے قبل سوئس ماہرین کو ان کے سامان میں تابکار مادے پولونیم کے ذرات ملے تھے، جس کے بعد رواں برس اگست میں ان کی موت کی وجوہات جاننے کیلئے تحقیقات کا آغاز کیاگیاتھا۔