انتخابات مقررہ وقت پر ہونگے‘ کامیاب جماعت کو آئینی طریقے سے اقتدار منتقل کیا جائیگا : صدر


کراچی (نوائے وقت نیوز + ایجنسیاں) صدر آصف علی زرداری نے کہا کہ موجودہ جمہوری حکومت اپنی مدت پوری کر رہی ہے یہ عوام کی فتح ہے کیونکہ موجودہ حکومت عوامی ووٹوں سے اقتدار میں آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ انتخابات شفاف طور پر مقررہ وقت پر منعقد کرائیں جائیں گے اور جو جماعت انتخابات میں کامیاب ہو گی اسے آئینی طریقے سے اقتدار منتقل کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ امن قائم کرنا اور معاشی استحکام ہماری اولین ترجیحات میں سے ہیں۔ معاشی استحکام سے غربت اور بے روزگاری کا خاتمہ ہو گا۔ ملک کو درپیش چیلنجز سے نمٹنے کے لئے سیاسی قوتوں سے ڈائیلاگ کے سلسلے کو بھی جاری رکھا جائے گا۔ مفاہمتی پالیسی سے جمہوریت کو استحکام حاصل ہوا ہے۔ وہ صدارتی کیمپ آفس بلاول ہاﺅس کراچی میں گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان اور وزیراعلی سندھ سید قائم علی شاہ سے ملاقات اور قبل ازیں وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک سے ٹیلی فون پر گفتگو کر رہے تھے۔ علاوہ ازیں صدر آصف علی زرداری نے ایک بیان میں کہا ہے کہ عوام اپنی صفوں میں اتحاد برقرار رکھیں عوام کسی کو بھی امن و امان کے خلاف مقاصد میں کامیاب نہ ہونے دیں۔ انہوں نے محرم الحرام میں سکیورٹی اداروں کے کردار کو خراج تحسین پیش کیا ہے جبکہ وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے بھی ملک بھر میں یوم عاشور کے پرامن طور پر گزر جانے پر اطمینان کا اظہار کیا ہے اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارکردگی کی تعریف کی ہے۔ صدر نے محرم الحرام میں سکیورٹی اداروں کے کردار کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے وزیر داخلہ رحمن ملک کو عاشورہ محرم کے دوران ڈی آئی خان اور راولپنڈی میں پیش آنے والے گھناﺅنے واقعات کی جامع رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔ صدر کے ترجمان سینیٹر فرحت اللہ بابر کے مطابق صدر نے عاشورہ کے دوران امن کےلئے حکومت کی کوششوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ راولپنڈی اور ڈی آئی خان کے افسوسناک اور قابل مذمت واقعات امن کی مجموعی فضاءکو خراب نہیں کر سکے جو عاشورہ کے دوران دیکھنے میں آئی ہے۔ علاوہ ازیں وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے عشرہ محرم کے دوران امن وامان کی صورتحال کو برقرار رکھنے کیلئے مسلح افواج، تمام وفاقی وصوبائی ایجنسیوں کے علاوہ تمام حکام کی تعریف کی اور وزیر داخلہ رحمن ملک کے کردار کو بھی سراہا۔ بیان میں وزیراعظم نے ڈی آئی خان میں ہونےوالے خود کش حملے کی تحقیقات کا بھی حکم دیدیا۔