مقبوضہ کشمیر حملے میں پاکستان ملوث ، بھارت کو غیر مستحکم کرنا چاہتا ہے: راجناتھ کا الزام

نئی دہلی(اے این این + آئی این پی) بھارتی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے مقبوضہ کشمیرمیں فوجی قافلے پر حملے کا الزام پاکستان پر عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ پڑوسی ملک بھارت کو غیر مستحکم کرنے کی کوشش کررہا ہے، سیکورٹی اہلکاروں کی بہادری اور جرات کو سلام پیش کرتا ہوں، نوجوان ملک کو عدم استحکام کا شکار کرنے والی قوتوں کے خلاف اٹھ کھڑے ہوں، سی آر پی ایف کی بس پر حملے کا جائزہ لینے کیلئے ٹیم پام پورہ بھجوائی جائے گی۔ اتوار کو بھارتی میڈیاکے مطابق سکھ بابا بندہ سنگھ بہادرکے 300ویں برسی کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے حملے کے بعد 2مسلح افراد کو ما رگرانے پرسیکورٹی اہلکاروں کی تعریف کی اور کہا کہ ہم گولی چلانے میں پہل نہیں کریں گے لیکن اگر ہمسایہ ملک نے ایسا کیا تو ہم جواب میں اپنی گولیوں کا حساب نہیں رکھیں گے۔انہوں نے کہا کہ میں نے جموں کشمیر کے علاقے پارمپور میں سی آر پی ایف کے اہلکاروں پر حملے میں 8اہلکاروں کی ہلاکت کے واقعہ کے بعد سیکرٹری داخلہ سے کہا ہے کہ وہ دورکنی کمیٹی پامپور بھجیں جو وہاں دہشت گردی کے حملے سے نمٹنے میں سکیورٹی کی نا کامی کا جائزہ لے انہوں نے کہا کہ بھارت دہشت گردی کے حملوں میں مارے جانے والے سکیورٹی اہلکاروں کو فراموش نہیں کر سکتا۔