سیاستدانوں، حکومتی عہدیداروں کی مبینہ جاسوسی، سپین نے بھی امریکی سفیر کو طلب کر لیا

میڈرڈ (نوائے وقت رپورٹ+ اے ایف پی) سپین نے جاسوسی کی اطلاعات پر امریکی سفیر کو طلب کر لیا۔ سپین کے وزیر اعظم میرینو راجوئے نے کہا میں امریکی سفیر سے اپنے ملک کی مبینہ جاسوسی کے حوالے سے وضاحت طلب کروں گا لیکن ہمارے پاس اس بات کے ثبوت نہیں ہیں کہ امریکہ نے جاسوسی کی ہے۔ میڈیا رپورٹس میں کہا گیا تھا امریکہ نے سپین کے بعض حکومتی عہدیداروں اور سیاستدانوں کی جاسوسی کی ہے۔
 ان میں سابق سوشلسٹ وزیر اعظم راڈاکز زیاتیروبھی شامل ہیں۔