دمشق : مسجد کے سامنے کار بم دھماکہ‘ 30 افراد جاں بحق‘ 100 سے زائد زخمی

دمشق : مسجد کے سامنے کار بم دھماکہ‘ 30 افراد جاں بحق‘ 100 سے زائد زخمی

دمشق (اے ایف پی+ نوائے وقت رپورٹ) شام کے دارالحکومت دمشق میں کار بم دھماکے سے 30 افراد جاں بحق اور 100سے زائد زخمی ہو گئے جبکہ تین بچے بھی مارے گئے۔زخمیوں کو ہسپتال داخل کرا دیا گیا۔ خانہ جنگی میں ہلاکتیں ایک لاکھ پندرہ ہزار ہو گئیں۔ غیر ملکی خبر رسال ایجنسی کے مطابق یہ بم دھماکہ ایک مسجد کے سامنے ہوا۔ کار میں دھماکہ خیز مواد نصب تھا۔ جونہی نمازی جمعہ کی نماز ادا کرکے باہر نکلے تو زور دار دھماکہ ہو گیا۔ کسی گروپ نے فی الحال اس کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔ زخمیوں کو طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ اے پی اے کے مطابق کار بم دھماکے کے نتیجے میں تین بچے بھی مارے گئے۔ شام کی سرکاری خبر رساں ایجنسی کا کہنا ہے کہ حکومت کے خلاف برسر پیکار ایک باغی کار میں بارودی مواد بھر رہا تھا کہ دھماکہ ہو گیا جبکہ باغیوں نے حملے کا ذمہ دار بشار الاسد کی حامی افواج کو ٹھہرایا ہے۔ واضح رہے کہ شام میں گزشتہ ڈھال سال سے زائد عرصے سے جاری خانہ جنگی کے باعث اب تک ایک لاکھ 15ہزار سے زائد افراد ہلاک اور ہزاروں زخمی ہو چکی ہیں جبکہ لاکھوں افراد اندرون اور بیرون ملک پناہ لینے پر مجبور ہیں۔