امریکہ کا شام کے ساحلوں پر تعینات طیارہ بردار جہاز کو واپس بلانے کا فیصلہ

دبئی(آن لائن) شام میں روا ں سال 21 اگست کو کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے بعد امریکہ کی جانب سے ممکنہ خطرے کا جو امکان پیدا ہوا تھا وہ اب ختم ہوگیا ہے اور امریکہ نے شام کے ساحلوں پر تعینات جنگی جہازوں کی واپسی کا فیصلہ کرلیا ہے جو کسی بھی لمحے واپس لوٹ جائیں گے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق شام میں امریکی کارروائی کا امکان کم ہونے کے بعد پہلے مرحلے پر امریکہ نے دہشت کی علامت اپنے انتہائی خرچیلے طیارہ بردار جہاز'' نمیٹز'' کو شام کے قریبی ساحلوں سے واپس بلانے کی تیاری کر لی ہے۔ امریکی بحریہ اس نوعیت کے دس طیارہ بردار رکھتی ہے جن میں سے ہر ایک کی عمومی قیمت ساڑھے چار ارب ڈالر ہے۔ اس بیڑے کے ایک ہفتے کے دوران صرف معمول کے آپریشنز پر 25 ملین ڈالر اخراجات اٹھتے ہیں اور اس پر موجود طیاروں کی جنگی ضروریات کیلئے پرواز بھرنے کے دوران یہ اخراجات ایک ہفتے کے دوران 40 ملین ڈالر ہو جاتے ہیں۔
امریکی جنگی جہاز واپس