بین الاقوامی امدادی تنظیم ریڈ کراس افغانستان میں طالبان کو ابتدائی طبی امداد فراہم کرنے کی تربیت دے رہی ہے۔

بین الاقوامی امدادی تنظیم ریڈ کراس افغانستان میں طالبان کو ابتدائی طبی امداد فراہم کرنے کی تربیت دے  رہی ہے۔

انٹرنیشنل ریڈ کراس کے مطابق اس تربیتی پروگرام کے تحت صرف گزشتہ ماہ کے دوران ستر طالبان نے یہ تربیت حاصل کی ہے۔ ریڈ کراس کا کہنا ہے کہ افغانستان میں جنگ اور سڑکوں کی بندش کی وجہ سے بہت سے زخمی یا بیمار افغان باشندے ہسپتالوں تک نہیں پہنچ پاتے ۔ اسی لیے طالبان کوابتدائی طبی امداد فراہم کرنے کی تربیت دینے کا فیصلہ کیا گیا جو اس جنگ میں براہِ راست ملوث ہیں۔ ادھر برطانوی اخبار گارڈین کے مطابق ریڈ کراس کے اس تربیتی پروگرام پر تبصرہ کرتے ہوئے کابل میں نیٹو  ترجمان نے کہا ہے کہ نیٹو آئی سی آر سی کے  اقدام کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے اور تاہم ایسا کام غیرجانبدارانہ طور پر کیا جانا ضروری ہے۔ برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق ریڈ کراس کے کارکن سو سے زائد افغان سکیورٹی اہلکاروں کو پہلے ہی یہ تربیت دے چکے ہیں جبکہ افغان صوبے ہلمند اور قندھار میں نجی گاڑیوں کو بطور ایمبولنس چلانے والے افراد بھی اس تربیتی پروگرام سے مستفید ہوئے ہیں۔