ایم کیو ایم کا مقصد کسی قومیت کے خلاف نفرت پھیلانا نہیں: الطاف حسین

 ایم کیو ایم کا مقصد کسی قومیت کے خلاف نفرت پھیلانا نہیں: الطاف حسین

لندن( نوائے وقت نیوز+نیشن رپورٹ)متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے کہاہے کہ ان کی تحریک کامقصد علاقائی قومیت یاطبقہ کے خلاف نفرت پھیلانانہیں بلکہ محروم لوگوں کے حقوق کیلئے جدوجہدکرناہے۔ ایم کیوایم کے اعلامیہ کے مطابق الطاف حسین نے نائن زیروعزیزآبادپر تحلیل شدہ رابطہ کمیٹی ،عبوری رابطہ کمیٹی اوردیگر شعبہ جات کے ذمہ داران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے ابتداءمیں ہجرت کر کے آنے والے محروم لوگوں کے حقوق کے حصول کے لئے تحریک شروع کی تھی لیکن بعدمیں یہ ملک کے 98فیصدغریب ومظلوم عوام کی آوازبن گئی۔ انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم ملک کے چپہ چپہ سے محروم لوگوں کوان کے حقوق دلانے کیلئے جدوجہد کررہی ہے۔الطاف حسین نے کہا کہ المیہ ہے مقامی لوگ فخر سے کہتے ہیں اس آزاد وطن پر صرف ہمارا ہی حق ہے اور ہجرت کرکے آنے والے وطن کے وارث قرار نہیں دئیے جاسکتے۔”دی نیشن“ کے مطابق الطاف حسین نے کہا کہ اگر کارکنوں نے خود کو نہ بدلا تو وہ اپنے قائد کو کھو دیں گے۔ میں نے آج تک اپنے کارکنوں کوکرپشن، بے ایمانی، دھوکہ بازی، کسی کا حق مارنے یا اپنے اختیارات کے ذریعے کسی پر ناجائز دباﺅ ڈالنے کا درس نہیں دیا۔ انہوں نے کہا کہ میں نے اپنے خاندان کے لئے کبھی تحریک سے کوئی فائدہ حاصل نہیں کیا خواہ وہ الیکشن کا مرحلہ ہو یا بلدیاتی انتخابات کا، میں نے اپنے خاندان کو کبھی ٹکٹ نہیں دئیے، انہوں نے کہا کہ میرا خاندان زندگی بچانے کےلئے جلا وطن ہوا۔ میں متعدد بار اصلاح احوال کے لئے ری آرگنائزیشن کرتا رہا لیکن اس مرتبہ مجھے بہت مشکل اور کٹھن فیصلے کرنے پڑے تو میں نے اللہ پر بھر وسہ کرتے ہوئے اور اپنے استحقاق کو استعمال کرتے ہوئے لندن اور پاکستان کی پوری رابطہ کمیٹی کو معطل کر دیا۔ طاقت ملنے کے بعد خواہشات کا غالب آنا فطرت کا حصہ ہے۔ انسان کی خواہشات کی کوئی حد نہیں ہے، مخلوط حکومت میں شمولیت کے باعث ذمہ داروں میں خرابیاں پیدا ہوئیں۔