ترکی نےاسرائیل پر واضح کیا ہے کہ اگروہ خطے میں امن چاہتا ہے تو جارحیت کا راستہ چھوڑ کر آزاد فسلطینی ریاست کے قیام کے لیے عالمی برادری سے تعاون کرے۔

وزیر اعظم طیب اردگان نے انقرہ میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل خطے میں قیام امن کے بجائے جنگی جرائم کا مرتکب ہو رہا ہے، ان کا کہنا تھا کہ نئے متوقع اسرائیلی وزیراعظم بنیا مین نیتن یاہو مشرق وسطیٰ میں امن کے قیام اورآزاد فلسطینی ریاست کے لیے عالمی برادری سے تعاون کریں ۔ ترک وزیراعظم نے خبردار کیا کہ جب تک فلسطینیوں کو ان کے بنیادی حقوق نہیں دیے جاتے،امن کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو سکتا۔ انہوں نے فلسطینی تنظیم حماس سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ اسرائیل کو تسلیم کرے اور مذاکرات کے قومی دھارے میں شامل ہو کر امن کوششوں میں مدد کرے۔