بنگلہ دیشی فوجیوں نے ناکافی تنخواہوں اور سہولیات کے فقدان پر بغاوت کردی

بنگلہ دیشی فوجیوں نے ناکافی تنخواہوں اور سہولیات کے فقدان پر بغاوت کردی

بنگلہ دیش رائفلز کے دستے نے ڈھاکہ میں قائم سرحدی محافظوں کے ہیڈ کوارٹرز کے قریب شاپنگ پلازہ پر اچانک فائرنگ کھول دی اور مارٹر گولے برسائے۔ بنگلہ دیشی ٹیلی ویژن کے مطابق ہیڈ کوارٹر میں فوجی حکام کا اجلاس ہورہا تھا جب بنگلہ دیش رائفلز نے ہال کے سکیورٹی گارڈز کو فائرنگ کرکے زخمی کردیا اور ہال کا گھیراؤ کرلیا۔ فوجیوں نے تنخواہوں میں اضافے اور سہولیات کی فراہمی کے لئے نعرے بھی لگائے ۔ اس موقع پر پولیس اور بنگلہ دیش رائفلز کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا ۔ بھارتی ٹی وی کے مطابق پر تشدد مظاہرے میں بیس افراد ہلاک بھی ہوئے ہیں ۔ بنگلہ دیشی حکومت نے فوج طلب کرلی ہے اور باغی فوجی دستے سے فوری طور پر ہتھیار ڈالنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ فوج کے مطابق وزیر اعظم شیخ حسینہ واجد نے باغی دستے کو مطالبات کے حوالے سے مذاکرات کی پیشکش کی ہے۔