آرمی چیف اور سابق صدر کیخلاف مقدمہ چلایا جائے: بنگلہ دیشی اپوزیشن

ڈھاکہ (اے پی پی) بنگلا دیش کی اپوزیشن جماعت بی این پی کے ارکان پارلیمنٹ نے ملک میں دو سال تک ایمرجنسی نافذ رکھنے پر آرمی چیف، سابق صدر اور نگران وزیر اعظم کے خلاف مقدمات چلانے کا مطالبہ کر دیا۔ ذرائع ابلاغ کی رپورٹس کے مطابق بنگلہ دیش نیشنلسٹ پارٹی (بی این پی) کے ارکان نے گزشتہ روز پارلیمنٹ کے اجلاس میں کہا کہ ملک میں ایمرجنسی نافذ رکھ کر دو سال تک عوام کو ٹارچر کیا گیا۔ نگران حکومت کے تیار کردہ 2006-07ء کے ضمنی بجٹ پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے بی این پی کے رکن پارلیمنٹ شاہد الدین چوہدری نے کہا کہ حکومت پہلے آرمی چیف جنرل معین الدین، سابق صدر ایاز الدین احمد اور نگران وزیر اعظم فخر الدین احمد پر ان کے جرائم کے مقدمات چلائے جائیں گے تب ہی یہ بجٹ منظور ہو سکیں گے۔ اس موقع پر اشرف الدین، زید العابدین، صلاح الدین چوہدری اور دیگر اپوزیشن ارکان نے دو سالہ ایمرجنسی کے دوران کئے گئے اقدامات کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے انہیں غیر آئینی قرار دیا۔