برطانوی اخبار نے انکشاف کیا ہے کہ اسرائیل نے پینتیس سال قبل جنوبی افریقہ کو ایٹمی ہتھیار فروخت کرنے کی پیشکش کی تھی۔

برطانوی اخبار نے انکشاف کیا ہے کہ اسرائیل نے پینتیس سال قبل جنوبی افریقہ کو ایٹمی ہتھیار فروخت کرنے کی پیشکش کی تھی۔

برطانیہ کے معروف اخبار گارڈین  نے خفیہ دستاویزات شائع کیں ہیں جن کے مطابق اس وقت کے اسرائیلی وزیردفاع شمون پیریزنے اپنے جنوبی افریقن ہم منصب پی ڈبلیو بوتھا سے جوہری ہتھیاروں کی فراہمی کے حوالے سے مذاکرات کیے تھے ۔ دونوں وزرائے دفاع کی خفیہ ملاقات میں اتفاق کیا گیا کہ اسرائیل اپنے پاس موجود مختلف سائز کے کیمیائی اور ایٹمی ہتھیار جنوبی افریقہ کو فراہم کرے گا۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ یہ خفیہ دستاویزات ایک امریکی سکالر ساشا پولاکو سرانسکی کے ہاتھ لگیں جو کہ اس سلسلے میں ایک کتاب کی تحقیق کر رہی ہیں ۔ اخبار کا دعویٰ ہے کہ یہ دستاویزات اسرائیل کے پاس ایٹمی ہتھیاروں کی موجودگی کا ایک بڑا اور واضح  ثبوت ہیں حالانکہ  اسرائیل نے  کبھی بھی ایٹمی ہتھیاروں کی موجودگی کا اعتراف نہیں کیا ۔