افریقہ میں 8 مغوی یورپی زندہ ہیں: القاعدہ نے تصدیق کر دی

لندن (بی سی سی) شمالی افریقہ میں القاعدہ کے ذیلی گروپ نے کہا ہے کہ ان کے قبضے میں یورپی ممالک سے تعلق رکھنے والے آٹھ مغوی ابھی تک زندہ ہیں۔ القاعدہ این اسلامک مغرب (اے کیو آئی ایم) نے اپنے ایک ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ وہ جلد ہی ان مغویوں کی ویڈیو جاری کرے گا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ’ہم مغویوں کے خاندانوں اور ان کے والدین کو یقین دلاتے ہیں کہ ان کے بچے محفوظ ہیں۔ اطلاعات کے مطابق اِن مغویوں میں سے پانچ کا تعلق فرانس سے ہے جبکہ باقی کی شہریت تاحال واضح نہیں ہے۔ اے کیو آئی ایم کا یہ بیان چار فرانسیسی مغویوں کے خاندانوں کی طرف سے فرانس میں ریلیاں نکالنے کے بعد سامنے آیا ہے۔ یورپ سے تعلق رکھنے والے ان افراد کے اغوا کو ایک ہزار دن گزرنے کے موقع پر پیرس، سینٹ سیری، نانٹیس، اور اورلینز میں ریلیاں نکالی گئیں تھیں۔ اے کیو آئی ایم نے اپنے اس موقف کو بھی دہرایا کہ اگر فرانس نے شمالی افریقہ میں کوئی نیا فوجی آپریش شروع کیا تو وہ فرانسیسی مغویوں کو ہلاک کر دیں گے۔ خیال رہے کہ فرانس نے جنوری میں افریقی ملک مالی میں شدت پسندوں کے خلاف کارروائی کے لیے اپنی فوجیں بھیجیں تھیں۔