شمالی افغانستان لڑائی فیصلہ کن مراحلے میں داخل ہو چکی ہے،طالبان کسی بھی وقت ہتھیار ڈال سکتے ہیں۔ نیٹوفوج کےسربراہ میجرجنرل ہینس ویرنر

شمالی افغانستان لڑائی فیصلہ کن مراحلے میں داخل ہو چکی ہے،طالبان کسی بھی وقت ہتھیار ڈال سکتے ہیں۔  نیٹوفوج کےسربراہ میجرجنرل ہینس ویرنر

پنٹاگون میں کابل سے ویڈیوکانفرنسنگ کے ذریعے میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے ایساف کمانڈرنے بتایاکہ شمالی افغانستان میں طالبان کے حوصلے پست ہو چکے ہیں،اسلحے اورخوراک کی شدید قلت کے باعث وہ کسی بھی وقت ہتھیارڈال سکتے ہیں۔ ميجرجنرل ہینس ویرنرکا کہناتھاکہ طالبان کے پاس اسلحہ خریدنے کےلیےپیسے نہیں، حالات برقرار رہے تووہ جلد شکست سے دوچارہوجائیں گے۔ اس موقع پرشمالی افغانستان میں تعینات امریکی فوج کے ڈپٹی کمانڈر نے بتایا کہ شمالی افغانستان میں متعدد مقامات پرطالبان کوشکست کاسامنا ہے اور ہتھیار ڈالنے کے لیے کئی طالبان رہنماؤں نے امریکی فوج سے رابطے کیے ہیں۔