بھارتی اپوزیشن نے ارکان اسمبلی کو خریدنے سے متعلق وکی لیکس کے انکشافات کے بعد لوک سبھا میں وزیراعظم منموہن سنگھ کے خلاف تحریک استحقاق جمع کرا دی ۔

بھارتی اپوزیشن نے ارکان اسمبلی کو خریدنے سے متعلق وکی لیکس کے انکشافات کے بعد لوک سبھا میں وزیراعظم منموہن سنگھ کے خلاف تحریک استحقاق جمع کرا دی ۔

وکی لیکس کی جانب سے بھارتی وزیراعظم منموہن سنگھ پر پیسے دے کر ووٹ خریدنے کے حوالے سے انکشافات پربھارتی اپوزیشن کی جانب سے شدید ردعمل دیکھنے میں آیا ہے ۔ اپوزیشن لیڈرسشما سوراج نے بھارتی وزیراعظم منموہن سنگھ کے خلاف تحریک استحقاق جمع کرادی جس میں کہا گیا ہے کہ حکمراں جماعت کانگرس نے دو ہزارآٹھ میں اعتماد کا ووٹ لینے کے لیے ارکان پارلیمنٹ کو رشوت دی تھی ۔ حکومتی ارکان نے وکی لیکس کے انکشافات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس میں کوئی صداقت نہیں ۔ ادھر وکی لیکس کے بانی جولین اسانج کا کہنا ہے کہ ان کے انکشافات بالکل درست ہیں ۔ انہوں نے اس بات پر اصرار کیا کہ من موہن سنگھ کے لیے بھارتی ارکان پارلیمنٹ کی وفاداریاں خریدی گئیں اور اس چیز کے ثبوت ان کے پاس موجود ہیں ۔