امریکہ : سیاہ فام نوجوان نے دو پولیس اہلکار قتل کر کے خودکشی کر لی‘ عوام میں شدید خوف و ہراس

نیویارک (اے ایف پی+رائٹرز+اے پی پی) امریکہ کے شہر نیویارک میں سیاہ فام مسلح نوجوان نے 2پولیس اہلکاروں کو قتل کرنے کے بعد خودکشی کر لی۔ کرسمس سے صرف چند روز قبل اس واقعہ سے شدید خوف و ہراس پھیل گیا۔ مقامی میڈیا کے مطابق یہ واقعہ حالیہ دنوں میں سفید فام امریکی پولیس اہلکاروں کے ہاتھوں سیاہ فام نوجوانوں کی ہلاکت کا ردعمل ہو سکتا ہے۔ تفصیلات کے مطابق امریکی شہر نیویارک میں بروکلین کے علاقہ میں گزشتہ روز پولیس اہلکار انسداد دہشتگردی کے ایک تربیتی کورس کے دوران سرکاری گاڑی میں بیٹھے تھے کہ اسی دوران 28سالہ سیاہ فام اسماعیل برنسلے نے پولیس اہلکاروں پر اندھا دھند فائرنگ کر دی۔ جس سے دونوں اہلکار شدید زخمی ہو گئے اور بعدازاں ہپستال لے جاتے ہوئے دم توڑ گئے۔ وقوعہ کے بعد حملہ آور نوجوان نے قریبی سب وے سٹیشن میں داخل ہو کر اپنے سر میں گولی مار کر خودکشی کر لی۔ دوہرے قتل کی واردات کے بعد پولیس نے علاقے کا گھیرا¶ کر لیا۔ پولیس ترجمان سارجنٹ لی جونز کے مطابق حملہ آور افریقی نژاد امریکی تھا اور چند روز قبل اس نے اپنی سابق گرل فرینڈ کو فائرنگ کر کے زخمی کر دیا تھا۔ ادھر امریکی صدر بارک اوباما نے 2پولیس اہلکاروں کی ہلاکت کی شدید مذمت کی ہے۔ آج میں لوگوں سے کہتا ہوں کہ تشدد کو مسترد کر دیں۔ دوہرے قتل کا واقعہ ناقابل قبول ہے۔
امریکی اہلکار/ہلاک