قبلہ اوّل عالم اسلام کا تیسرا مقدس ترین مقام، مذاکرات حرام ہیں: فلسطینی علما

مقبوضہ بیت المقدس (این این آئی) فلسطین کی سپریم علما کونسل اور سرکردہ علماء کرام نے قرآن واحادیث مبارک کی روشنی میں ایک متفقہ فتویٰ صادر کیا ہے جس میں مسجد اقصیٰ کو حرمین شریفین کے بعد عالم اسلام کا تیسرا مقدس ترین مقام قرار دے کر اس پر سودے بازی اور کسی بھی قسم کے مذاکرات کو حرام قرار دیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق فلسطینی علما کونسل، مفتی اعظم فلسطین اور قبلہ اوّل کے آئمہ وخطبا کے دستخطوں پر مبنی یہ فتویٰ گذشتہ روز سامنے آیا ہے۔ فتوے میں واضح الفاظ میں کہا گیا ہے کہ مسجد اقصیٰ مسلمانوں کا تیسرا مقدس ترین مقام ہے۔ اسکے تقدس کا تقاضا ہے کہ اسے کسی دوسرے مذہب کے لوگوں کے ساتھ تقسیم کرنے کیلئے کسی قسم کے مذاکرات میں شامل کیا جائے اور نہ ہی اس پر سودے بازی کی جائے۔ اس پر مفتی اعظم فلسطین الشیخ محمد حسین، فلسطینی علما کونسل کے چیئرمین الشیخ عبدالعظیم سلھب، سپریم اسلامی کمیٹی کے سربراہ اور مسجد اقصیٰ کے امام وخطیب الشیخ ڈاکٹر عکرمہ صبری سمیت کئی دوسرے علما کے دستخط ثبت ہیں۔
فلسطینی علما