عودی حکومت کی غیرقانونی تارکین کو وطن واپسی کیلئے دوبارہ 3 ماہ کی مہلت

جدہ ( امیر محمد خان سے ) سعودی حکومت نے ایک مرتبہ پھر غیر قانونی مقیم افراد کو مہلت دی ہے کہ وہ آئندہ تین ماہ (90 دن) میں اپنے رہائشی کاغذات درست کرالیں یا سعودی عرب سے چلے جائیں۔ سعودی حکومت نے تین سال قبل بھی غیر قانونی مقیم افراد کو سہولت مہیا کی تھی۔
جس کے نتیجے میں تقریباً اڑھائی ملین غیرقانونی تارکین وطن سعودی عرب سے چلے گئے تھے جبکہ لاکھوں افراد نے اپنے قونصلیٹ اور سفارت خانوں کی مدد سے اپنے رہائشی کاغذات یا تو درست کر لئے تھے یا قانونی طور پر ملازمتیں حاصل کرلی تھیں۔ واضح رہے تین سال قبل پاکستان قونصیلٹ میں اس وقت کے قونصل جنرل آفتاب کھوکر نے ہزاروں پاکستانیوں کو مختلف اداروں میں ملازمتیں دلوائیںتھیں۔ اس مرتبہ سعودی وزارت داخلہ ایک مہم کا آغاز کرنے جارہی ہے جسکا نام ’’A Nation without violations‘‘ رکھا گیا ہے، ولی عہد و ڈپٹی وزیر اعظم و وزیر داخلہ شہزادہ محمد بن نائف نے کہا ہے کہ امید ہے غیر قانونی مقیم افراد جو عمرہ، حج یا رہائشی پرمٹ نہ ہونے کی بناء پر اب تک غیر قانونی طور پر مقیم ہیں وہ نوے دن کی اس سہولت سے فائدہ اٹھائینگے۔ اس دوران ان پر کوئی جرمانہ یا سزا نہیں ہوگی۔ وزارت داخلہ کے ترجمان میجر جنرل منصور ال ترکی نے کہا ہے کہ اس مہم کو کامیاب کرنے کیلئے سعودی عرب کی 19 ایجنسیاں تعاون کرینگی۔ سعودی اداروں کو بھی ہدائت کی گئی ہے کہ وہ غیر قانونی مقیم افراد کو پناہ دیں اور نہ ہی ملازمت دیں۔
سعودی حکومت/ مہلت