کشمیر کاز کیلئے علی گیلانی کی ثابت قدمی سکھوں کو بھی حوصلہ بخشتی ہے: صدر دل خالصہ

نئی دہلی (کے پی آئی) پنجاب میں دل خالصہ کے صدر کنور پال سنگھ کی قیادت  میں ایک پانچ رکنی وفد نے حریت کانفرنس (گ)  کے چیئرمین سید علی گیلانی کی عیادت کی۔ وفد گزشتہ روز علی گیلانی کی نئی دہلی میں عارضی رہائش گاہ مالویہ نگر آیا اور ان کی جلد صحت یابی اور درازی عمر کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ۔ وفد نے کہا کہ گیلانی کی کشمیر  کاز کے حوالے سے یکسوئی اور ثابت قدمی اپنے حقوق کے لئے جدوجہد کرنے والے سکھوں کو بھی حوصلہ بخشتی ہے اور وہ  ان کے لئے بھی ایک آئیڈیل ہیں۔ حریت ترجمان ایاز اکبر کے مطابق وفد نے  ایک گھنٹہ تک گیلانی سے ملاقات کی جس کے دوران کشمیر کی صورت حال اور بھارت میں اقلیتوں کے ساتھ روا رکھے جا رہے رویہ پر بھی تبادلہ خیالات کیا گیا ۔ سکھ رہنما نے کہا کہ بھارت کا بڑی جمہوریہ ہونے کا دعویٰ محض ایک ڈھکوسلہ ہے اور یہ ملک اصل میں ایک سامراجی طاقت کے طور ابھرا ہے جس کی تمام تر لگام برہمنی اقلیت کے ہاتھ میں ہے ۔ یہ ملک نہ صرف کشمیری قوم کی مبنی برحق آواز کو ریاستی پاور کے ذریعے سے دبانے کی کوشش کر رہا ہے بلکہ سکھوں کے حقوق کو بھی یہاں بے دریغ طریقے سے پامال کیا جا رہا ہے اور ان کے ساتھ دوسرے درجے کے شہریوں کا سلوک روا رکھا جا رہا ہے ۔کنور پال سنگھ نے جموں و کشمیر میں معصوم نوجوانوں کی ہلاکتوں پر اپنی گہری تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ فورسز کو یہاں بے لگام چھوڑ دیا گیا ہے۔