روس نے ویٹو کا حق استعمال کرتے ہوئے اقوام متحدہ کی وہ قرارداد منظور نہیں ہونے دی جس میں شمالی کوریا کے گذشتہ ہفتے کئے گئے تازہ میزائل تجربے کی مذمت کی جانا تھی

روس نے ویٹو کا حق استعمال کرتے ہوئے اقوام متحدہ کی وہ قرارداد منظور نہیں ہونے دی جس میں شمالی کوریا کے گذشتہ ہفتے کئے گئے تازہ میزائل تجربے کی مذمت کی جانا تھی

ماسکو (اے ایف پی+اے پی پی) روس نے ویٹو کا حق استعمال کرتے ہوئے اقوام متحدہ کی وہ قرارداد منظور نہیں ہونے دی جس میں شمالی کوریا کے گذشتہ ہفتے کئے گئے تازہ میزائل تجربے کی مذمت کی جانا تھی۔ ادارے کے مطابق امریکہ کی جانب سے جمع کروائی گئی اس قرارداد میں پیانگ یانگ حکومت کو انتہائی سخت الفاظ میں اس طرح کے اپنے تجربات روکنے کے لیے کہا گیا تھا۔ نیویارک میں سفارت کاروں نے بتایا روس اس تنازعے کو بات چیت کے ذریعے حل کرنے پر زور دے رہا ہے اور قرارداد میں اسی طرح کی عبارت شامل کرنے کی حمایت کر رہا تھا۔دوسری جانب چین کی جانب سے اس قرارداد کے حق میں ووٹ ڈالے جانے کی توقع کی جا رہی تھی۔سلامتی کونسل نے شمالی کوریا کے میزائل تجربے کی شدید مذمت کرتے ہوئے نئی پابندیوں کی دھمکی دے دی ہے۔ متفقہ بیان میں مطالبہ کیا گیا پیانگ یانگ مزید ٹیسٹ سے باز رہے۔ تجزیہ کاروں کے مطابق کشیدگی کے باوجود شمالی کوریا ایک اور جوہری تجربے کی تیاری کر رہا ہے۔ یہ بات تجزیہ کاروں اور 38 نارتھ مانیٹرنگ گروپ نے اپنی رپورٹ میں کہی ہے۔
روس / قرارداد