چین نے پہلا کارگو خلائی جہاز خلا میں بھیج دیا

چین نے پہلا کارگو خلائی جہاز خلا میں بھیج دیا

بیجنگ(آئی این پی)چین نے اپنا پہلا کارگو خلائی جہاز تیان زہو خلا میں بھیج دیا ، لانگ مارچ 7-Y2 کیریئر راکٹ تیان زہو کو چینی صوبہ ہینان کے وین چھینگ خلا ئی مرکز سے چھوڑا گیا ۔چین منصوبہ کے مطابق 2022تک خلا میں چینی خلائی سٹیشن تعمیر کرے گا ، چین خلا میں مستقل خلائی اسٹیشن کے قیام کا ارادہ رکھتا ہے جو دس سال تک بر قرار رہ سکتا ہے۔اور خلائی سٹیشن کو برقرار رکھنے کے لیے کارگو خلائی جہاز تیان جو ون ترسیلات سے اہم کردار ادا کرئے گا۔ چائنہ ریڈیو انٹرنیشنل کے مطابق گزشتہ روز چین نے اپنا پہلا کارگو خلائی جہاز”تیان زہو“کو صوبہ ہینان کے خلائی سٹیشن وین چھینگ سے خلا میں چھوڑ دیا ۔چین چاہتا ہے کہ 2022تک خلا میں اپنا خلائی سٹیشن تعمیر کرے گا ۔ تفصیلات کے مطابق تیان گونگ 2خلائی جہاز اس کارگو جہاز کو ہر طرح کی سپلائی اور فیول مہیا کرے گا جب تک کارگو خلائی جہاز اپنے خلائی تجربات مکمل کر کے واپس زمین پر نہیں آجاتا چین خلا میں اپنا مستقل خلائی سٹیشن کی تعمیر 2022سے قبل تعمیر کرنا چاہتا ہے ۔ اس کارگو جہاز کے ذریعے وہ خلائی اسٹیشن کی تعمیر اور اس کو برقرار رکھنے میں اشیاءضروریات کی سپلائی کےلئے استعمال کیا جا سکے گا ۔ بغیر کارگو جہاز کے سٹیشن کی تعمیر اور اس کو برقرار رکھنے کےلئے ضروریات کی سپلائی ناممکن تھی۔