پاکستان کی پارلیمنٹ سے اب تک17 غیرملکی سربراہان مملکت، وزرائے اعظم اور سپیکرز خطاب کر چکے ہیں

پاکستان کی پارلیمنٹ سے اب تک17 غیرملکی سربراہان مملکت، وزرائے اعظم اور سپیکرز خطاب کر چکے ہیں

پاکستانی پارلیمنٹ سے سب سے پہلے 15مارچ 1950 کو شہنشاہ ایران نے خطاب کیا تھا جبکہ پھر انہوں نے 3جولائی 1962 کو قومی اسمبلی کا دورہ کیا اور اجلاس کی کارروائی دیکھی۔15جولائی1962 کو ہی فلپائن کے صدر دیوداماقاپگل نے قومی اسمبلی سے خطاب کیا۔ تیسرا خطاب انڈونیشیا کے صدر ڈاکٹر احمد سوئیکارنو نے 26جون 1963ء کو قومی اسمبلی میں کیا تھا۔ پارلیمنٹ سے خطاب کرنے والے غیر ملکی شخصیات میں سری لنکا کی خاتون وزیراعظم مسز بندرا نائیکے بھی ہیں جنہوں نے 5ستمبر 1974ء کو خطاب کیا جبکہ ترکی کے صدر کنعان ایورن نے سابق صدر ضیاء الحق کے دور میں 15نومبر 1985ء کو پارلیمنٹ سے خطاب کیا۔ چھٹا خطاب کرنے والے فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ مرحوم یاسر عرفات تھے ۔ اس وقت بے نظیر بھٹو وزیر اعظم تھیں ۔ فرانس کے صدر فرانکو متراں نے 20فروری 1990ء اور ایرانی مجلس شوریٰ کے ا سپیکر مہدی کروبی نے 24فروری 1991ء قومی اسمبلی جبکہ ایران کے صدر علی اکبر ہاشمی رفسنجانی نے 7ستمبر 1992ء کو پارلیمنٹ سے خطاب کیا۔ اسپیکر ایرانی مجلس شوری علی اکبر ناطق نوری نے 11 اپریل 1994ء کو قومی اسمبلی ، چینی صدر جیانگ ژی من نے 2دسمبر 1996ء کو سینیٹ کے خصوصی اجلاس اور برطانیہ ملکہ الزبتھ دوم نے 8 اکتوبر 1997ء کو پارلیمنٹ خطاب کیا۔13واں خطاب 12سال بعد 26اکتوبر2009ء کو ہوا جو ترکی کے وزیراعظم طیب ایر دو آن نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے کیا ، پھر چینی وزیر اعظم وین جیا باؤ نے 19 نومبر 2010ء کوقومی اسمبلی سے خطاب کیا،  15واں خطاب کرنے والی غیر ملکی شخصیت ایک بار پھر ترک وزیر اعظم رجیب طیب ایر دو آن ہی تھے جنہوں نے 21 مئی 2012 کو مشترکہ اجلاس سے خطاب کیا جبکہ موجودہ چینی وزیر اعظم لی کیانگ نے سینیٹ کے خصوصی اجلاس سے 23 مئی 2013ء کو خطاب کیا تھا ۔ اس وقت نگراں حکومت قائم تھی اور اب پارلیمنٹ  سے خطاب کرنے والے  17ویں غیر ملکی شخصیت چینی صدر شی چن پنگ ہیں