مصر: مرسی کے مزید 12 حامیوں کو سزائے موت سنا دی گئی

 مصر: مرسی کے مزید 12 حامیوں کو سزائے موت سنا دی گئی

قاہرہ (آن لائن) مصر کی ایک فوجداری عدالت نے برطرف صدر ڈاکٹر محمد مرسی کے مزید بارہ حامیوں کو ایک پولیس سٹیشن پر حملے کے الزام میں قصور وار قرار دے کر سزائے موت کا حکم دیا ہے۔سزا پانے والوں میں اخوان المسلمون  کے  سربراہ  محمد بد یع بھی شامل ہیں۔استغاثہ کے مطابق مدعاعلیہان نے جیزہ گورنری میں واقع ایک قصبے کرادسہ میں سکیورٹی فورسز کی طرف سے  جنگجوؤں کے ایک ٹھکانے پر چھاپہ مار کارروائی کے بعد ایک پولیس سٹیشن پر جوابی حملہ کردیا تھا جس کے نتیجے میں جیزہ کے ڈپٹی سکیورٹی ہیڈ میجر جنرل نبیل فراج مارے گئے تھے۔پراسیکیوٹرز نے عدالت میں تئیس ملزمان کے خلاف مقدمہ دائر کیا تھا۔مدعا علیہان پر سکیورٹی اہلکاروں کو ہلاک کرنے کے لیے ایک دہشت گرد گروہ کی تشکیل کا بھی الزام عائد کیا گیا تھا۔ مصری قانون کے تحت مدعاعلیہان کو ان سزاؤں کے خلاف اپیل کا حق حاصل ہے اور عدالتی فیصلے کو توثیق کے لئے ملک کے مفتی کے پاس بھی بھیجا جائے گا،پھر اس پر عمل درآمد کیا جائے گا۔