مشرف پر مقدمہ نوازشریف کے بڑھتے ہوئے اعتماد کی نشاندہی ہے: واشنگٹن پوسٹ

 واشنگٹن/ پیرس / اسلام آباد (اے این این) امریکی اخبار ”واشنگٹن پوسٹ“ کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کی سویلین حکومت تین مرتبہ فوجی بغاوت کا نشانہ بن چکی ہے، پرویز مشرف کے خلاف بغاوت کا مقدمہ نوازشریف حکومت کے بڑھتے ہوئے اعتماد کی نشاندہی ہے لیکن نوازشریف حکومت کا یہ فیصلہ ملک میں نئے تنازعات کو ہوا دے سکتا ہے، پاکستان کے کچھ لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ مشرف کا دور سکیورٹی اور معاشی استحکام کا دور تھا۔ پرویز مشرف کے خلاف مقدمے سے نواز شریف نے ملک کی طاقتور فوجی قیادت کو ناراض کرنے کا رسک لیا ہے ۔ ادھر فرانسیسی خبر رساں ادارے” اے ایف پی“ نے معروف پاکستانی تجزیہ کار حسن عسکری کے حوالے سے اپنی رپورٹ میں لکھا کہ ممکنہ طور یہ حکومتی اقدام متعدد معاملات میں اپنی ناکامی سے عوامی توجہ ہٹانے کی ایک کڑی ہو سکتی ہے۔ حسن عسکری نے کہا کہ ایک سابق فوجی سربراہ کے خلاف غداری کے الزام کے تحت مقدمہ چلانے سے حکومت اور فوج کے درمیان کشیدگی بڑھ سکتی ہے اور اس کا حتمی نتیجہ اس اقدام کی ناکامی کی صورت میں نکل سکتا ہے۔
واشنگٹن پوسٹ