امریکہ کابر طا نیہ سے ملک بدر کئے گئے پاکستانی پر القاعدہ کی سازش میں ملوث ہونے کا الزام

نیو یارک (آن لائن)امریکہ میں برطانیہ سے جلاوطن کیے جانے والے ایک پاکستانی شخص پر مانچسٹر اور نیویارک میں حملے کرنے کی القاعدہ کی سازش میں ملوث ہونے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔امریکہ میں سرکاری وکیل سلیا کوہن نے نیو یارک کی ایک عدالت میں 28 سالہ عابد نصیر پر برطانیہ کے شہر مانچسٹر میں دہشت گردوں کا سیل چلانے کا الزام عائد کیا ہے۔عابد نصیر جو عدالت میں اپنا دفاع خود کر رہے ہیں انھوں نے ان الزامات کو بے بنیاد قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ شواہد سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ وہ جہادی اور شدت پسند سوچ نہیں رکھتے۔الزامات ثابت ہونے کی صورت میں عابد کو عمر قید کی سزا بھی سنائی جا سکتی ہے۔اس مقدمے میں جیوری کے سامنے برطانوی انٹیلی جنس کے چھ افسران کو گواہان کے طور پر پیش کیا جائے گا لیکن ان کی شناخت کو خفیہ رکھنے کے لیے انھیں سروں پر وگ اور منہ پر میک اپ کر کے عدالت میں لایا جائے گا۔استغاثہ کا کہنا ہے کہ عابد نصیر ایک سازش میں ملوث تھا جس کے تحت مانچسٹر اور نیویارک کے زیر زمین ریلوے سمیت کئی جگہوں پر بم دھماکے کیے جانے کا منصوبہ بنایا گیا تھا۔ان پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ وہ القاعدہ کی عملی مدد کر رہے تھے اور تباہ کن مواد استعمال کرنے کا منصوبہ بنا رہے تھے۔