القاعدہ، داعش جیسے گروپوں نے اسلام کا غلط امیج پیش کیا ہے: اوباما

القاعدہ، داعش جیسے گروپوں نے اسلام کا غلط امیج پیش کیا ہے: اوباما

واشنگٹن (نمائندہ خصوصی) امریکی صدر بارک اوباما نے حقیقی پرامن اسلام کا دفاع کیا ہے۔ لاس اینجلس ٹائمز میں اپنے آرٹیکل میں انہوں نے کہا ہے کہ القاعدہ اور دولت اسلامیہ جیسے گروپوں نے مذہب اسلام کا غلط امیج پیش کیا ہے جسے دنیا بھر کے مسلمانوں نے مسترد کردیا ہے۔ دنیا ان مسلمان سکالرز کی آواز دوسروں تک پہنچائے جو اسلام کی حقیقی اور پرامن نوعیت کی تصویر پیش کرتے ہیں۔ انہوں نے لکھا ہے کہ کس طرح 9/11 کے واقعہ کے بعد خطرات سامنے آئے، ان چیلنجز سے نمٹنے کے لئے ہمیں داخلی اور عالمی طور پر متحد ہونا چاہئے۔ ہم جانتے ہیں کہ محض فوجی قوت سے مسائل نہیں حل ہونگے نہ ہی بےگناہ افراد کو قتل کرنے والے دہشت گردوں کو آسانی سے ختم کیا جاسکتا ہے۔ تجزیہ کاروں کے مطابق انہوں نے اسلامی دہشت گردی یا اسلامی انتہاپسند جیسے الفاظ استعمال کرنے سے گریز کیا۔ اس ہفتے ہم امریکی مسلمانوں سمیت مختلف عقائد کے لوگوں سے ملیں گے جنہوں نے خصوصی طور پر ہمارے ملک کے لئے کام کیا۔ یہ اس بات کی یاد دہانی ہے کہ امریکہ اس لئے کامیاب ہے کہ ہم تمام عقائد کے لوگوں کا خیرمقدم کرتے ہیں۔
اوباما