اسرائیل کا سویڈش وزیر خارجہ کو تل ابیب دورے کی اجازت دینے سے انکار‘ صہیونی ریاست نے من مانی اور جارحیت کی تمام حدیں پار کر دیں : مارگوٹ فالسٹروم

اسرائیل کا سویڈش وزیر خارجہ کو تل ابیب دورے کی اجازت دینے سے انکار‘ صہیونی ریاست نے من مانی اور جارحیت کی تمام حدیں پار کر دیں : مارگوٹ فالسٹروم

سٹاک ہوم (صباح نےوز+آن لائن) اسرائیل نے یورپی ملک سویڈن کی وزیرخارجہ مارگوٹ فالسٹروم کو فلسطینی ریاست کی حمایت کی پاداش میں اپنے ہاں دورے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا ہے۔ اور کہا انہیں کوئی دعوت نہیں دی گئی۔عرب ٹی وی کے مطابق اسرائیل اس سے قبل بھی سویڈن کی طرف سے خود مختار فلسطینی ریاست کی حمایت پر سٹاک ہوم سے سخت احتجاج کرچکا ہے۔سویڈش وزیرخارجہ مارگوٹ فالسٹروم کو تل ابیب میں دوسری جنگ عظیم کے دوران یہودیوں کو نازیوں کے مظالم سے بچانے والے سویڈش سفارت کار راوول والین باری کی یاد میں منعقدہ ایک تقریب میں مدعوکیا گیا تھا۔ دریں اثنا سویڈن نے فلسطینی ریاست کے حوالے سے اسرائیل کی ہٹ دھرمی پر مبنی پالیسیوں پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ صہےونی ریاست نے من مانی اور جارحیت کی تمام حدیں عبور کر دی ہیں اسرائیل کے جارحانہ اقدامات اور ناقابل قبول خارجہ پالیسی کی وجہ سے ہمیں بھی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔انہوں نے کہا کہ سویڈن فلسطین کے مقبوضہ عرب علاقوں میں اسرائیل کی یہودی کالونیوں کی تعمیر کا مخالف ہے اور ہم اسرائیل کی انہی پالیسیوں کی وجہ سے تل ابیب کو تنقید کا نشانہ بناتے ہیں۔ ہم سمجھتے ہیں کہ اسرائیل کی غیرقانونی آباد کاری دیرپا امن کے قیام میں ایک بڑی رکاوٹ ہے۔
سویڈش وزیر خارجہ