ماہرین نے بھارتی جارحانہ رویہ کو خطہ میں امن کیلئے خطرہ قرار دیدیا


اسلام آباد (جاوید صدیق) عسکری اور حکمت عملی کے ماہرین نے بھارت کی جانب سے لائن آف کنٹرول پر جارحانہ پالیسی روا رکھنے کے رویہ کو علاقے میں خطے کے امن کے لئے ایک خطرہ قرار دیا ہے۔ان ماہرین کے مطابق ماضی میں کئی مرتبہ بھارتی فوجی راستہ بھول کر پاکستان کے علاقے میں آگئے جنہیں بھارت کے حوالے کیا گیا لیکن پاک فوج کا ایک سپاہی رات کی تاریکی میں اگلے مورچوں کا راستہ بھول گیا تھا جس کو بے دردی سے شہید کر دیا گیا۔ ماہرین کے مطابق اکتوبر 2011ءمیں ایک بھارتی ہیلی کاپٹر سکردو میں پاکستانی علاقہ میں گھس آیا اور وہاں لینڈ کر گیا۔ پاکستان نے اعلیٰ روایات کو مدنظر رکھتے ہوئے بھارتی پائلٹوں کی تواضح کرنے کے بعد انہیں ہیلی کاپٹر سمیت واپس جانے کی اجازت دی گئی۔ لائن آف کنٹرول پر گذشتہ چند برس میں درجنوں بھارتی فوجی جو پاکستانی علاقہ میں آگئے تھے انہیں واپس بھارت کے حوالے کردیا گیا لیکن بھارت نے اس کے برعکس ایک غیر مسلح فوجی جوان کو ہاتھ کھڑے کرا کر شہید کر دیا گیا۔ بھارت کے جارحانہ رویہ سے خطے میں کشیدگی میں اضافہ ہو رہا ہے۔ جس سے خطے کا امن تہ و بالا ہو سکتا ہے۔
ماہرین