یکطرفہ تعلقات قائم نہیں ہونگے، پاکستان کو ہماری خواہشات تسلیم کرنا ہونگی: کرزئی

یکطرفہ تعلقات قائم نہیں ہونگے، پاکستان کو ہماری خواہشات تسلیم کرنا ہونگی: کرزئی

کابل (آن لائن) افغان صدر حامد کرزئی نے امریکہ سمیت اپنے تمام اتحادیوں اور عالمی برادری سے کہا ہے دہشت گردی کے خلاف عالمی جنگ میں افغان عوام کی قربانیوں کا اعتراف کرے۔ 2014ءکے بعد پاکستان سمیت اپنے تمام پڑوسی ممالک کے ساتھ خوشگوار تعلقات استوار کرنے کے خواہاں ہیں۔ پانچ روزہ کانفرنس کے موقع پر غیر ملکی سفیروں سے ملاقات اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا افغان عوام اور حکومت گزشتہ دس برسوں کے دوران دہشت گردی کے خلاف عالمی برادری کے ساتھ نہ صرف بھرپور تعاون کررہی ہے بلکہ بے شمار قربانیاں بھی دی ہیں، عالمی برادری کو بھی چاہئے کہ وہ ان قربانیوں کا اعتراف کرتے ہوئے افغانستان کے ساتھ تعاون کرے۔ صدر نے واضح کیا جس طرح ہم عالمی برادری کے تعاون کے مرہون منت ہیں اس طرح عالمی برادری بھی ہماری قربانیوں کی مرہون منت ہے۔ پاکستان کے ساتھ تعلقات کو اہمیت دیتے ہوئے صدر نے کہا جب ہم امریکہ کے اتحادی ہیں تو روس کے ساتھ بھی اپنے تعلقات بڑھانے کے خواہاں ہیں۔ بھارت کے ساتھ سٹرٹیجک معاہدے کی خواہش اپنی جگہ لیکن پاکستان کے ساتھ دوستانہ اور برادرانہ تعلقات قائم کرنا بھی ہماری پالیسی کا حصہ ہے لیکن یہ تعلقات یکطرفہ بنیادوں پر قائم نہیں ہوں گے بلکہ پاکستان کو ہماری خواہشات اور حقائق کو تسلیم کرنا ہو گا۔ ثناءنیوز کے مطابق انہوں نے کہا ہے کہ نیٹو سلامتی کی ذمہ داریاں افغان فوج اور پولیس کو سونپنے کے عمل میں تیزی لا ئے۔