امریکی فضائیہ کی جانب سے آواز کی رفتار سے چھ گنا تیز رفتار ہائپر سونک جیٹ کا تجربہ ناکام ۔

خبریں ماخذ  |  خصوصی رپورٹر
امریکی فضائیہ  کی جانب سے آواز کی رفتار سے چھ گنا تیز رفتار ہائپر سونک جیٹ کا تجربہ ناکام ۔

امریکی حکام کے مطابق ویو رائیڈر سپر سانک جیٹ کو ایک بی باون بمبار طیارے کی مدد سے بحرالکاہل کے اوپر پچاس ہزار فٹ کی بلندی سے چھوڑا گیا لیکن تکینکی خرابی کی وجہ سے اس کا سپرسانک انجن نہ چل سکا اور جہاز بحرالکاہل میں گر کر لاپتہ ہوگیا۔امریکی فضائیہ کے ترجمان کے مطابق جیٹ کی پرواز کے سولہویں سیکنڈ میں ہی خرابی کا پتہ چل گیا تھا تمام ڈیٹا کے مطابق انجن چلانے کے لیے بہترین حالات پیدا کیے گئے تھے،یہ لگاتار دوسرا موقع ہے کہ اس جیٹ کا انجن چلنے میں ناکام رہا ہے۔ دو ہزار گیارہ میں کیے گئے ایک اور تجربے میں بھی جیٹ کا انجن چل نہیں سکا تھا تاہم جون دو ہزار دس میں ایک تجربے کے دوران ویو رائیڈر نے آواز سے پانچ گنا زیادہ تیز رفتار سے سفر کیا لیکن وہ مطلوبہ رفتار تک پہنچنے میں ناکام رہا تھا۔