شیطانوں کو کنکریاں مارنے کے لئے کمزور اور معذور افراد کے لئے 226 برقی گاڑیاں

منیٰ (این این آئی) سعودی وزارت بلدیات و دیہی ترقی نے شیطان کو کنکریاں مارنے کے لئے جانے والے بزرگ‘ معذور‘ کمزور اور بیمار افراد اور خواتین کی سہولت کے لئے 226 الیکٹرک گاڑیاں مہیا کر دی ہیں جن سے 70 ہزار افراد استفادہ کریں گے۔ مناسک حج کے سلسلے میں حاجیوں کی طرف سے شیطان کو تین دن علامتی طور پر کنکریاں مارنے کے دوران حادثات کی روک تھام کے لئے سعودی عرب کی حکومت نے سوا چار ارب ریال کی لاگت سے وادیِ منیٰ مےں 950 میٹر طویل اور 80 میٹر چوڑا پانچ منزلہ جمرات پل کمپلیکس تعمیر کر لیا ہے۔ حاجیوں کے یہاں آنے اور واپس جانے کے لئے 12 علیحدہ علیحدہ داخلی اور خارجی راستے بنائے گئے ہیں۔ یہاں ایک گھنٹے کے دوران تین لاکھ افراد کے رمی کرنے کی گنجائش ہے اور اس سال دنیا بھر سے آنے والے 25 لاکھ سے زائد حاجی یہ پل استعمال کر سکیں گے۔ سعودی وزارت حج نے تمام معلمین کو ہدایت کی ہے کہ کنکریاں مارنے کے لئے حاجیوں کو طے شدہ ٹائم شیڈول کے مطابق روانہ کیا جائے تاکہ جمرات پل پر اکٹھے ہونے والے حاجیوں کے ہجوم کو کنٹرول کیا جا سکے۔ جمرات کی چار منزلوں پر درجہ حرارت 24 سے 29 سینٹی گریڈ کے درمیان رکھنے کے لئے 360 نئے ائر کولر نصب کئے گئے ہیں۔ سعودی حکومت کی جانب سے بہترین انتظامات اور اللہ تعالیٰ کے خصوصی فضل و کرم کے باعث حاجیوں میں میرس وائرس کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا۔ سول ڈیفنس کے محکمہ نے بارش، طوفان، آتشزدگی اور رش کی وجہ سے پیدا ہونے والی مشکلات سے نمٹنے کیلئے خصوصی پلان ترتیب دیا مکہ مکرمہ میں ٹریس سروس کے ڈائریکٹر جنرل انجینئر فہد بن محمد ابوطربوش نے بتایا کہ حجاج کرام کی نقل و حرکت اور مقدس مقامات تک لے جانے کیلئے مشاعر ٹرین سروس کا باقاعدہ آغاز کر دیا گیا۔