’’بھارتی مسلمانوں کو ووٹ کے حق سے محروم کردیا جائے‘‘ میں نے ایسا کہا ہی نہیں، شیوسینا کا رہنما مکر گیا

ممبئی (نیوز ڈیسک) ممبئی کی انتہاپسند ہندو جماعت شیوسینا کے رکن لوک سبھا سنجے راوت نے مسلمانوں کو ووٹوں کے حق سے محروم کرنے کے اپنے بیان پر کڑی تنقید کے بعد یوٹرن لے لیا۔ ممبئی میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے سنجے راوت نے کہا کہ میرے بیان کو میڈیا نے غلط رپورٹ کیا۔ میں نے مسلمانوں کو ووٹ ڈالنے کے حق سے محروم کرنے کا کوئی غیر آئینی مطالبہ نہیں کیا۔ میں نے صرف یہ کہا تھا کہ بڑی سیاسی جماعتیں خاص کر کانگریس مسلمانوں کو ووٹ لینے کیلئے استعمال کرکے پھینک دیتی ہیں، یہ کھیل ختم ہونا چاہئے۔ بہتر ہے مسلمان ووٹ ہی نہ ڈالیں۔ واضح رہے کہ سنجے راوت کے متنازع بیان پر شیوسینا کی اتحادی جماعت بی جے پی نے بھی سخت ناپسندیدگی کا اظہار کیا تھا۔