مقبوضہ کشمیر: یاسین ملک کا پنڈتوں کیلئے الگ کالونیوں کے بھارتی منصوبے کیخلاف 18 اپریل سے بھوک ہڑتال کا اعلان

سرینگر(آن لائن)  مقبوضہ کشمیر میں جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک نے مقبوضہ کشمیر میں کشمیری پنڈتوں کے لیے علیحدہ کالونیوں کے بھارتی منصوبے کے خلاف 18اپریل سے 30گھنٹے کی علامتی بھوک ہڑتال کا اعلان کیا ہے۔  یاسین ملک نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا  کہ بھارت نے پنڈتوں کے لیے علیحدہ بستیاں قائم کرکے کشمیر کو ایک اور فلسطین بنانے اور یہاں کے لوگوں کے درمیان نفرتوں کی دیوار کھڑی کرنے کی ایک بڑی سازش رچا لی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی منصوبے کے خلاف جمعہ کے روز سرینگر میں ہونے والے احتجاج میں جس والہانہ طریقے سے کشمیری پنڈت خواتین اور مردبھی شامل ہوئے وہ ان فرقہ پرستوں کیلئے چشم کشا ہے جو مقبوضہ علاقے میں فرقہ واریت کے بیچ بونا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایک گہری سازش ہے جس کا اصل مقصد تحریک آزادی کو فرقہ واریت کا رنگ دینا ہے۔ ادھر بھارتی فوج اور پولیس نے ضلع کپواڑہ کی لو لاب وادی کے کئی دیہات کا  محاصرہ تیسرے روز بھی جاری رکھا۔ ادھرضلع بڈگام کی چرار شریف کالونی میں بھی بھارتی فوج نے تلاشی کی کارروئی شروع کر دی ہے۔ ڈیموکریٹک فریڈم پارٹی کے چیئرمین شبیر احمد شاہ نے پنڈتوں کیلئے الگ بستیاں قائم کرنے کے بھارتی منصوبے کیخلاف کشمیری عوام کے ردعمل اور احتجاج کو بروقت قراردیتے ہوئے اس کو سراہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ زندہ قومیں ہمیشہ سنجیدہ اور متحد ہوکر سازشوں کا توڑ کرتی ہیں۔ انہوں نے کامیابی کے حصول کیلئے اتحاد و اتفاق کو لازمی قرار دیتے ہوئے کہا کہ ریاست کے خصوصی تشخص کو مٹانے کے لئے فرقہ پرست قوتیں متحد ہوچکی ہیں اورہمیں الگ الگ راہوں پر چلنے کے بجائے اجتماعیت اور اتحاد کا مظاہرہ کرنا چاہیے۔