صدر ژی جن پنگ کے دورئہ پاکستان کی منسوخی معمولی بات ہے، منفی اثر نہیں پڑیگا: چینی تھنک ٹینک

بیجنگ(اے این این) چین کے ایک تھنک ٹینک نے کہا ہے کہ چینی صدر ژی جن پنگ کے دورہ پاکستان کی منسوخی معمولی بات ہے اس سے کوئی منفی اثرنہیں پڑیگا، صدر کا دونوں ملکوں کا الگ الگ دورہ زیادہ موثر ثابت ہوگا۔ چین کے ادارہ برائے بین الاقوامی عصری تعلقات کے ریسرچ فیلو ہوشیشنگ نے سرکاری اخبار ’’گلوبل ٹائمز‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگرچہ چینی صدر کا دورہ پاکستان منسوخ ہونا معمولی بات ہے لیکن اس سے پاکستان اور بھارت دونوں کے ساتھ تعلقات مزید بہتر بنانے میں مدد مل سکتی ہے کیونکہ یہ دورہ اب اس بات سے مبرا ہوگا کہ چینی صدر پہلے کس ملک جاتے ہیں۔ پاکستان اور بھارت کے سفارتی تعلقات معمول کے نہیں ہیں چنانچہ اب جبکہ چین کے صدر دونوں ملکوں کا الگ الگ دورہ کرینگے تو یہ سوال پیدا نہیں ہوگا کہ وہ پہلے کس ملک میں جائیں، الگ الگ دورے موثر ثابت ہونگے۔ یہ پہلی بار ہے کہ کسی چینی صدر کا ہمارے سدا بہار دوست ملک کا دورہ منسوخ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چینی صدر کا بھارت کا دورہ اگلے دس سال کیلئے بھارت چین تعلقات کی بنیاد ڈالے گا۔ دونوں ملکوں کی قیادت کے ساتھ ملاقاتوں میں سرحدی تنازع بات چیت کا بنیادی ایجنڈا شاید نہ ہو کیونکہ اس تنازع کے حل کیلئے تدبر اور مزید صبر کی ضرورت ہے۔