مقبوضہ کشمیر: حزب کمانڈر کی اہلیہ‘ سال‘ سسر گرفتار

سرینگر (آن لائن + اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے دہلی دھماکوں میں مطلوب حزب کمانڈر شاکر حسین عرف چھوٹا حافظ کی اہلیہ‘ ساس اور سسر کو گرفتار کر لیا ۔ دوسری جانب ویشو ہندو پریشد کے رہنما توگڑیا کی اشتعال انگیز تقریر کے بعد سرحدی ضلع راجوڑی میں کشیدگی بدستور قائم ہے جبکہ کرفیو بھی نافذ ہے۔ 100 سے زائد افراد کو گرفتارکر لیا گیا ہے، سید علی گیلانی بھی گھر پر نظربند ہیں۔ ایک پولیس اہلکار کو گولی مار کر زخمی کر دیا گیا۔ بتایا گیا ہے کہ چھوٹا حافظ کی 25 سالہ اہلیہ تسلیمہ بیگم کو اس کے والد اور والدہ سمیت پوچھ گچھ کیلئے تتہ پانی سے گرفتار کیا گیا جس کے بعد کشتواڑ منتقل کیا گیا۔ سی آر پی ایف‘ پولیس اور دیگر پیرا ملٹری فورسز نے قصبہ میں فلیگ مارچ کیا۔ دریں اثناءعلاقہ سے مقامی لوگوں نے قصبہ کی طرف ایک جلوس نکالا لیکن پولیس نے اسے کھیوڑا سے آگے بڑھنے کی اجازت نہیں دی۔ ذرائع کے مطابق پولیس نے مظاہرین کو روکنے کے لئے لاٹھی چارج کیا جس کے جواب میں ان لوگوں نے پولیس پر پتھراﺅ کیا۔ پولیس نے مزید 4 نوجوانوں کو پکڑ لیا۔ ریاستی وزیر علی محمد ساگر نے بتایا پروین توگڑیا کے شر انگیز بیان پر ان کے خلاف پولیس سٹیشن راجوڑی میں ایف آئی آر درج کر لی گئی ہے۔ بھارتی فوجی گاڑی نے ایک بچے کو کچل دیا جو موقع پر چل بسا۔ ریاستی اسمبلی میں ترجمان وزارت داخلہ نے کہا کہ عسکریت پسندی کے دوران 1990 سے اب تک گمشدگیوں کے نتیجہ میں یتیم اور بیوہ ہوئے افراد کی تعداد کا صحیح پتہ لگانے کےلئے کوئی سروے عمل میں نہیں لایا گیا ہے۔ 8611 بیوائیں، 26086 بچے یتیم اور 1903 افراد معذور ہو گئے۔ کشمیری رہنما یاسین ملک نے کہا ہے فرقہ پرستوں کو چھوڑ دینا حکومت کی نااہلی ہے۔